top of page

میر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ کا گلاسگو برطانیہ میں سراجا منیرا کانفرنس سے خطاب

دینہ ( ادریس چودھری ) بندہ مومن کا قلب کیفیات کا وہ گھر ہے جس میں محبت اور نفرت دونوں ہوتی ہیں۔عظمتِ مومن یہ ہے کہ وہ اپنے اللہ سے شدید محبت کرتا ہے اور تمام محبتیں اس محبت کے تابع ہوتی ہیں۔قلب کی حیات کا راز بھی اسی محبت میں مضمر ہے۔جب یہ محبت قلب میں جا گزیں ہو تو پھر ہر حال میں بندگی مقدم ہوتی ہے پھر بندے کا قول و فعل اللہ اور اس کے حبیب ﷺ کے حکم سے تجاوز نہیں کرتا۔ان کیفیات کا حصول اس شعبے کے ماہر سے ہی ممکن ہے۔اس کے لیے وہ سینہ چاہیے جو ان کیفیات کا حامل ہوجو قلب اطہر محمد الرسول اللہ ﷺسے آرہی ہوتی ہیں اور ان کیفیات کو آگے پہنچانے کا فن بھی جانتا ہو۔امیر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ کا گلاسگو برطانیہ میں سراجا منیرا کانفرنس سے خطاب انہوں نے کہا کہ قلب کی اصلاح اللہ کریم سے محبت کی وہ بلندی عطا کرتی ہے کہ بندہ اپنی تمام امیدیں صرف اللہ کریم سے ہی رکھتا ہے اور جیسے کوئی اللہ کریم سے توقع رکھتا ہے اْسے ویسے ہی پائے گا۔جب بندہ ایمان لے آتا ہے پھر تعلق مع اللہ کو ہمیشہ مقدم رکھتا ہے۔ان کیفیات کے لیے صحبت ضروری ہے۔آپ ﷺ کی معیت نے اْن عظیم ہستیوں کو درجہ صحابیت سے سرفراز فرمایااور صحابہ کی خدمت میں حاضر ہونے والے تابعی کہلائے اور تابعین کی خدمت میں آنے والے تبع تابعین کہلائے۔تبع تابعین کی عظمت کو اس بات سے سمجھ لیجیے کہ اگر تمام اہل ایمان ولی اللہ ہوجائیں اور اْن سب کو اکٹھا کیا جائے تو وہ تبع تابعین کے کف پا کو نہیں پا سکتے۔

دورہ انگلینڈ کے آخری پروگرام میں بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آپ جہاں بھی ہوں وہاں بحیثیت مسلمان کے سفیر ہوں۔اور جس خطے سے آپ کا تعلق ہے جہاں آپ کے آباؤ اجداد دفن ہیں اس کے سفارتکار بنیں اور یہ ذمہ داری ادا کریں۔وطن عزیز کا درد ہمیشہ اپنے اندر رکھیں وہاں ہر چیز ہے لیکن دستیاب نہیں ہے۔اس لیے اپنے کلام و عمل کو مثبت رکھیں اور قانون کی پاسداری جیسے یہاں کرتے ہیں اپنے ملک میں بھی ایسے ہی کریں۔اللہ کریم صحیح شعور عطا فرمائیں۔آخر میں انہوں نے سب ساتھیوں کی کوششوں کو سراہا اور امت مسلمہ کے اتحاد و اتفاق کی خصوصی دعا بھی فرمائی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

0 comments

Comments

Rated 0 out of 5 stars.
No ratings yet

Add a rating
bottom of page