top of page

منشیات فروشوں نے نوجوان نسل کے مستقبل داؤپر لگا دئیے والدین کی جمع پونجی منشیات پر خرچ ہونے لگی

پنڈدادنخان: تحصیل پنڈدادنخان میں منشیات فروشوں نے نوجوان نسل کے مستقبل داؤپر لگا دئیے والدین کی جمع پونجی منشیات پر خرچ ہونے لگی کئ طالب علم تعلیم ادھوری چھوڑ کر یورپ کا خواب دیکھنے لگے منشیات فروشوں نے سب سے پہلے نوجوان نسل کو شراب ہر لگایا شراب اشرافیہ کا سب سے پسندیدہ مشروب ہے ان کی شراب بیرون ملک سے آتی ہے چند روز قبل ڈھائی کروڑ کی امپورٹیڈ شراب پکڑی گئ اس کے بعد چرس افیون ہیروئن کے علاوہ متعدد نشے متعارف کرائے گئے آجکل آئس(شیشہ) کا نشہ نوجوان طلباء خواتین اور چھوٹے چھوٹے معصوم بچوں میں منتقل کیا جا رہا ہے آئس ایک ایسا نشہ ہے جس کے پہلی بار استعمال سے انسان کے اندر خوشی کے ہارمونز انتہائی ایکٹیو ھو جاتے ہیں جس سے انسان انتہائی خوشی محسوس کرتا ہے۔آئس کا نشہ 36 سے 72 گھنٹے تک ہوتا ہے۔اور وہ انسان 72 گھنٹوں تک جاگتا رہتا ہے۔پہلی دفعہ انسان کو آئس استعمال کرنے سے جو لذت اور خوشی محسوس ہوتی ھے وہ آہستہ آہستہ کم ہو جاتی ہے۔اور اس کے ساتھ انسان آئس کی ڈوز پے ڈوز بڑھاتا جاتا ہے تاکہ وہ پہلے والی خوشی محسوس کر سکے۔ کسی بھی نشے سے انسان کے اندر رشتے کی تمیز نہیں رہتی مگر آٸس ایک خطرناک چیز ھے جو وقت کے ساتھ ساتھ انسان کی ہڈیوں کو پکڑ لیتی ہے۔آئس استعمال کرنے والے انسان پر بھروسہ کرنابیوقوفی ہے۔ آئس استعمال کرنے والے انسان کے ہاتھوں سے کسی بھی وقت کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش آسکتا ہے جب وہ نشے کی حالت میں ہو۔طلباء کے والدین شہریوں صحافیوں تاجروں نے آئی جی پنجاب آر پی او راولپبڈی ڈی پی او جہلم تمام تھانہ کے ایس ایچ او صاحبان سے اپیل کی ہے کہ ان منشیات فروشوں کا فوری قلع قمع کیا جائے



0 comments

Comments

Rated 0 out of 5 stars.
No ratings yet

Add a rating
bottom of page