top of page

فواد آیا سواد آیا کا نعرہ ٹھس ایم این اے فرخ الطاف کے بعد فواد چوہدری بھی پی ٹی آئی چھوڑ گیا

رپورٹ! سکندر گوندل۔ پنڈدادنخان

فواد آیا سواد آیا

کا نعرہ ٹھس

ایم این اے فرخ الطاف کے بعد فواد چوہدری بھی پی ٹی آئی چھوڑ گیا

الیکشن 2018 میں جہلم کے دونوں قومی حلقوں سے پی ٹی آئی کے امیدوار فرخ الطاف اور فواد چوہدری ایم این اے منتخب ہوئے تھے مگر سوا سال قبل فرخ الطاف نے راہیں الگ کر لیں

این اے 61 سے منتخب ایم این اے فواد چوہدری جو بنیادی طور پر ساہیوال سے تعلق رکھتے تھے نے مذکورہ حلقہ کے اپنے ووٹرز سپورٹرز کے ساتھ حقیقی معنوں میں پردیسیوں والا سلوک ہی روا رکھا اور لوگ انکے خلاف ہوتے گئے

الیکشن 2018 میں تحصیل جہلم اور تحصیل پنڈدادنخان کے جن بیسیوں دھڑوں نے فواد چوہدری کی غیر مشروط حمایت کی تھی موصوف نے انکو اپنے دور اقتدار میں سائیڈ لائن پر لگا دیا تھا جس پر تقریباً 80 فیصد دھڑے فواد چوہدری کو ایم این اے بننے کے دو سال کے اندر ہی چھوڑ گئے تھے

پی ٹی آئی پر موجودہ آنے والے کڑے وقت کے ساتھ ہی فواد چوہدری جو وفاداریاں تبدیل کرنے میں مشہور ہیں نے پارٹی سے علیحدگی کا اعلان کر کے بچے کھچے ووٹرز کا دل توڑ دیا ہے، لوگوں میں انکے خلاف نفرت مزید پھیل گئی ہے

حلقہ این اے 61 سے پی ٹی آئی کے ایم این اے فواد چوہدری جو عوام کو نظر انداز کرنے پر عرصہ تین سال سے نفرت کا شکار تھے موجودہ پارٹی کرائسس پر اپنے حلقہ اور ووٹر کو پیٹھ دکھا کر بھاگ کھڑے ہوئے ہیں اور انہوں نے پی ٹی آئی چھوڑنے کا اعلان کر دیا ہے، فواد چوہدری جن کے بارے انکے بعض سپورٹرز نے " فواد آیا سواد آیا" کا نعرہ متعارف کروایا تھا اب انکے پارٹی چھوڑنے پر لوگوں نے " فواد گیا سواد آیا " کا نعرہ پروان چڑھانا شروع کر دیا ہے، لوگوں کا کہنا ہے کہ فواد چوہدری کاتعلق چونکہ جہلم پنڈدادنخان اور حلقہ این اے 61 سے تھا ہی نہیں اور انکا تعلق بنیادی طور پر ساہیوال سے تھا تمتع انہوں نے اس چیز کا عملی مظاہرہ کرتے ہوئے اپنے ایم این اے کے دور میں وماہ ے رشتہ داروں اور بھائیوں کو پروموٹ کیا انہیں عہدوں سے نوازا اور خاص کر سرکاری ٹھیکوں میں خوب مال بنایا، لوگوں کا کہنا ہے کہ فواد چوہدری چونکہ عمران خان کے قریب تھے اور منسٹر ہونے کی وجہ سے آئے روز الیکٹرانک میڈیا پر نظر آتے تھے تو انہوں نے یہ سمجھ رکھا تھا کہ میں حلقے میں جاؤں یا نہ جاؤں لوگوں کام کروں یا نہ کروں علاؤہ کے مسائل حل کروں یا نہ کروں مجھے اگلی بار بھی عمران خان نے ٹکٹ دے دینا ہے اور میں پی ٹی آئی کے ووٹ بنک کی بنا پر الیکشن جیت جاؤں گا لیکن حقیقت میں فواد چوہدری کی ناقص اور عوام دشمن پالیسیوں کے باعث حلقہ کے لوگ آئے روز گروپ اور دھڑے چھوڑ کر فواد چوہدری سے الگ ہو رہے تھے۔ حلقہ کے عوام اور خصوصاً پی ٹی آئی ورکرز میں پارٹی اور عمران خان کا ساتھ چھوڑنے پر فواد چوہدری کیخلاف شدید غم وغصہ پایا جارہا ہے۔۔

0 comments

Comments

Rated 0 out of 5 stars.
No ratings yet

Add a rating
bottom of page