top of page

فضول اور بے جا ٹیکسز ،بجلی کے بلوں نے ہرلحاظ سے عوام کی چیخیں نکلوادیں،افسر شاہی کی بھی غفلت



پنڈدادنخان (صفرعلی خانJhelumnews.uk) بجلی کے بلوں نے ہرلحاظ سے عوام کی چیخیں نکلوادیں جہاں فضول اور بے جا ٹیکسز نے عوام کی باں باں کروادی وہیں واپڈا کے کم پڑھےلکھے اہلکاروں اور لاپرواہ افسر شاہی کی غفلت نےعوام کی پریشانیاں مزید بڑھا دی ہیں بل ڈسٹری بیوٹرزنے بھی ہر چھوٹے بڑے دیہات شہروں میں ایک ہی مخصوص مقام پر سینکڑوں بجلی کے بلز پھنک کر اپنی جان چھڑانا وطیرہ بنا لیا تحصیل بھر میں محکمہ واپڈا کی طرف سے ڈیفیکٹو قرار دئے گئے سینکڑوں میٹروں کی تبدیلی عوام کے لئے خواب بن گیا جس کے باعث ہر ماہ اندازے سے بھیجے گئے بجلی کے بل کہیں شہنائیاں بجواتے اور کہیں صف ماتم بچھواتے نظر آتے ہیں اس درپیش مسلہ کے باعث کہیں بجلی کا کم استعمال کرنے والے صارفین بھاری بجلی کے بلز دیکھتے ہوئے واپڈا کو کوستے دکھائی دیتے اور کہیں دبا کے بجلی کا استعمال کرنے والے آٹے میں نمک برابر بل دیکھ کر واپڈا زندہ باد کے نعرے لگاتے اور تو اور مقررہ تاریخ سے قبل بجلی کے بلز جمع کروانے والے صارفین کو ہرمہینے گزشتہ بل نہ جمع کرانے پہ محکمانہ نوٹس موصول ہونے کے مسائل میں بھی آئے روز اضافہ دیکھا جاتا ہے پنڈدادنخان کے نواحی گاؤں ہرن پور کے رہائشی خلیل احمد المعروف مطلوب نے صحافیوں سے گفتگو میں کہا کہ لگاتار تین ماہ سے ٹیکسوں سے بھرپور بجلی کا بل مقررہ تاریخ سے پہلے جمع کرانے کے باوجود ہرمہینے درستگی کرانے کی خاطر دھریالہ جالپ اور پنڈ دادنخان کے دفاتر کا طواف کرنا پڑتا ہے جس کی تمام تر ذمہ داری واپڈا کے لاپرواہ اور ان پڑھ اہلکاروں اور افسروں پر عائد ہوتی ہے جن کی غفلت سے دیہاڑی دار طبقہ ذہنی اذیت میں مبتلا ہے خلیل احمد المعروف مطلوب سمیت اہلیان علاقہ نے واپڈا کے اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے

0 comments

留言

評等為 0(最高為 5 顆星)。
暫無評等

新增評等
bottom of page