top of page

ریلوے کالونی کے غیر آباد کوارٹروں سے کروڑوں مالیت کی لکڑی ، لوہے کا سامان چوری کئے جانے کی اطلاع

جہلم(چوہدری عابد محمود Jhelumnews.uk)جہلم ریلوے کالونی کے غیر آباد کوارٹروں سے لاکھوں، کروڑوں مالیت کی لکڑی اور لوہے کا سامان چوری کئے جانے کی اطلاعات ۔ سامان میں انگریز دور کی کھڑکیاں ، دروازے، الماریاں، شہتیر ، لوہے کے گیٹ شامل ہیں۔ ریلوے کالونی کھنڈرات کا منظر پیش کرنے لگی۔ باقی کوارٹروں کی حفاظت کا بھی کوئی معقول انتظام نہیں۔جہلم کی ریلوے کالونی کم و بیش ایک سو سال پرانی ہے۔ کالونی کے کوارٹروں اور کوٹھیوں کی باقاعدہ دیکھ بھال نہ ہونے کی وجہ سے انہیں خطر ناک قرار دے کر ملازمین سے خالی کروالیا گیا تھا۔ خالی کروائی جانے والی ان عمارتوں میں دوکنال پر محیط افسران کے ، ڈاک بنگلے، ٹی آئی ،اور ، اے ای این کے بنگلے، اور درجہ چہارم سمیت افسران کے درجنوں سے زائد کے کوارٹرز شامل ہیں۔ ان رہائشگاہوں پر انگریز دور کی کھڑکیاں اور دروازے جو اعلی قسم کی لکڑی سے تیار کئے گئے تھے ، لوہے کے بنے ہوئے گیٹ اور گارڈر شہتیر لگے ہوئے تھے جو اتار کر ملازمین دیدہ دلیری کے ساتھ غائب کر رہے ہیں ،جبکہ انتہائی باو ثوق زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ملازمین لوہے کی اشیا کباڑیوں کو فروخت کر دیتے ہیں،جو گوجرانوالہ اور لاہور بھجواتے ہیں اسطرح نایاب لوہے کو بھٹیوں میں پگھلا کر قیمتی اشیاء تیار کرتے ہیں یہ بھی معلوم ہوا ہے قیمتی اشیاء کی خورد برد میں ریلوے کی مقامی انتظامیہ بھی شامل ہے۔ مزید انکشاف ہوا ہے کہ متروک ٹیلیگراف سٹم کی ترسیلی لائنوں میں لگی ہوئی میلوں لمبی تانبے کی تاریں بھی ریلوے افسران اور ملازمین کی سرپرستی کی وجہ سے خورد برد کر لی گئی ہیں۔ خورد برد کئے گئے لکڑی اور لوہے کی سامان کی مالیت اربوں ،کروڑوں روپے میں بتائی جاتی ہے۔ ریلوے کے درجنوں سے زائد کوارٹرا بھی بھی بے یارو مددگار نظر آرہے ہیں جن کی حفاظت کا کوئی معقول انتظام نہیں ۔ ریلوے کی عمارتوں کی نگرانی کا باقاعدہ نظام نہیں ہے۔

0 comments

Comments

Rated 0 out of 5 stars.
No ratings yet

Add a rating
bottom of page