top of page

ذرا جانئیے۔روزانہ 2 انڈے کھانے سے صحت پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں؟


ویب ڈیسک

کثر افراد ناشتے میں انڈے کھانا پسند کرتے ہیں۔

انڈوں سے پروٹین، منرلز، وٹامنز اور دیگر متعدد غذائی اجزا جسم کو ملتے ہیں اور اس غذا کو صحت کے لیے بھی مفید سمجھا جاتا ہے۔

مگر ایک خیال اکثر سامنے آتا ہے کہ زیادہ انڈے کھانے سے گریز کرنا چاہیے کیونکہ اس سے بلڈ کولسیٹرول بڑھ سکتا ہے۔


اب اس سوال کا جواب ایک نئی طبی تحقیق میں دیا گیا۔تحقیق میں بتایا گیا کہ معتدل مقدار میں انڈے کھانے سے دل کی صحت کو فائدہ ہوتا ہے۔

درحقیقت ہر ہفتے 12 انڈے کھانے سے بھی کولیسٹرول کی سطح میں کوئی خاص اضافہ نہیں ہوتا۔

امریکا کے ڈیوک کلینیکل ریسرچ انسٹیٹیوٹ کی اس تحقیق میں 50 سال یا اس سے زائد عمر کے 140 افراد کو شامل کیا گیا تھا۔

یہ تمام افراد امراض قلب کے شکار تھے یا ان میں دل کی شریانوں کے امراض سے متاثر ہونے کا خطرہ زیادہ تھا.ن افراد کو 2 گروپس میں تقسیم کیا گیا اور ایک گروپ کو ہر ہفتے 12 انڈے استعمال کرائے گئے جبکہ دوسرے گروپ کو ہر ہفتے 2 انڈے کھانے کی ہدایت کی گئی۔

4 ماہ تک جاری رہنے والی تحقیق کے نتائج سے معلوم ہوا کہ ہر ہفتے 12 انڈے کھانے والے افراد کا کولیسٹرول لیول لگ بھگ 2 انڈے کھانے والوں جتنا ہی ہوتا ہے۔

تحقیق کے مطابق ہر ہفتے 12 انڈے کھانے سے لوگوں کی صحت یا شریانوں کی صحت پر کوئی مضر اثرات مرتب نہیں ہوتے۔

درحقیقت ہر ہفتے 12 انڈے کھانے والے افراد میں انسولین کی مزاحمت گھٹ گئی اور وٹامن بی کی سطح میں اضافہ ہوا۔محققین نے بتایا کہ انڈوں کے فوائد کے حوالے سے مزید تحقیق کی ضرورت ہے مگر یہ واضح ہے کہ انڈے کھانے سے بلڈ کولیسٹرول کی سطح میں اضافہ نہیں ہوتا۔

اس تحقیق کے نتائج امریکن کالج آف کارڈیالوجی کے سالانہ کانفرنس کے موقع پر پیش کیے گئے۔

یہ پہلی تحقیق نہیں جس میں انڈوں کے فوائد پر روشنی ڈالی گئی ہے۔

اس سے قبل 2022 میں ہونے والی ایک تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ روزانہ ایک اضافی انڈے کو کھانے سے دل کی شریانوں کے امراض کا خطرہ نہیں بڑھتا بلکہ امراض قلب کا خطرہ گھٹ جاتا ہے۔

اسی طرح 2020 میں ہونے والی ایک تحقیق میں بتایا تھا کہ روزانہ ایک سے زیادہ انڈے کھانے سے امراض قلب سے موت کا خطرہ نہیں بڑھتا۔

0 comments

Comments

Rated 0 out of 5 stars.
No ratings yet

Add a rating
bottom of page