top of page

دینہ (نثار احمد مغل سے) تحصیل دینہ کے علاقے کڑی جنجیل میں 2 دوستوں کا قتل ، پولیس نے 5 نامزد اور 2 نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا

دینہ (نثار احمد مغل سے) تحصیل دینہ کے علاقے کڑی جنجیل میں 2 دوستوں کا قتل ، پولیس نے 5 نامزد اور 2 نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا۔ مقتول صدام حسین کے خاندان کی ملزمان سے دیرینہ دشمنی چل رہی تھی، موٹرسائیکلوں پر سوار ملزمان نے صدام اور وقاص کو گرلز کالج سنگھوئی کے سامنے روکا اور اندھا دھند فائرنگ کا نشانہ بنایا۔ تفصیلات کے مطابق جمعہ کی شام کو تحصیل دینہ کے علاقے کڑی روڈ پر گرلز کالج کے قریب قتل ہونے والے موٹرسائیکل سوار یوٹیلٹی سٹور کے ڈیلی ویجر ملازم 34 سالہ راجہ وقاص ولد راجہ حق نواز اور اس کے دوست 25 سالہ صدام حسین ولد مشتاق حسین کیقتل کا مقدمہ تھانہ چوٹالہ پولیس نے پانچ نامزد اور دو نامعلوم افراد کے خلاف 302.148/149 اور 109 کی دفعات کے تحت درج کر لیا۔ تھانہ چوٹالہ میں مقتول صدام حسین کے چچا خالد بیگ کی مدعیت میں تیمور ولد سرور، عمران ولد اصغر بیگ سکنہ قدرت آباد، امتیاز ولد عدالت، حقیق ولد صدیق سکنہ شاہ پور خورد، اکرم ولد نامعلوم سکنہ قدرت آباد اور دو نامعلوم ملزمان کے خلاف درج کیا گیا۔ علاقہ شاہ پور خورد کے رہائشی خالد بیگ ولد مرزا نجیب خان نے تھانہ چوٹالہ میں درخواست دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ 19 اپریل بروز جمعہ کو میرا بھتیجا صدام حسین ولد مشتاق حسین اپنے دوست محمد وقاص ولد حق نواز سکنہ شاہ پور خورد کے ہمراہ موٹر سائیکل پر گھر سے باہر نکلا اور مجھے بتایا کہ میں کڑی جا رہا ہوںاس طرح شام 5 بجکر 20 منٹ پر کڑی کی طرف روانہ ہوئے ان کے پیچھے ہی میں اور ناصر سڑک کی طرف آگئے۔ خالد بیگ نے درخواست میں بتایا کہ تیمور ولد سرور اور عمران ولد اصغر بیگ سکنائے قدرت آباد ایک موٹر سائیکل پر، دوسرے موٹر سائیکل پر امتیاز ولد عدالت اور حقیق ولد صدیق سکنائے شاہ پور خورد جبکہ تیسرے موٹر سائیکل پر اکرم ولد نا معلوم سکنہ قدرت آباد ہمراہ دو نامعلوم افراد 3 موٹر سائیکلوں پر وقاص اور صدام کے پیچھے روانہ ہو گئے جن کے ساتھ ہماری سابقہ دشمنی چل رہی ہے۔ مقتول صدام حسین کے چچا نے بتایا کہ مجھے شک ہوا کہ کہیں صدام کو نقصان نہ پہنچائیں میں اور ناصر بھی اپنی موٹر سائیکل پر ان کے تعاقب کرنے لگے۔ 6 بجکر 15 منٹ پر جب وقاص اور صدام گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج سنگھوئی کڑی روڈ کے سامنے پہنچے تو انہوں نے صدام کو روک لیا۔ خالد بیگ نے بتایا کہ تیمور نے پسٹل 30 بور سے سیدھا فائر صدام پر کیا جو اسے منہ پر لگا دوسرا فائر عمران نے کیا جو صدام کے سر پر لگا، تیسرا فائر امتیاز نے کیا جو کہ صدام کے سینے پر لگا اکرم نے پسٹل 30 بور سے فائر کیا جو کہ وقاص کے سینے پر لگا، پھر حقیق نے پسٹل 30 بور سے فائر کیا جو گرے ہوئے وقاص کے سینے پر لگا۔ مقتول صدام حسین کے چچا نے درخواست میں بتایا کہ 2 نا معلوم اور دیگر 5 افراد نے وقاص اور صدام پر اندھادھند فائرنگ شروع کردی جو وقاص اور صدام کے جسم کے مختلف حصوں پر لگے، میں اور ناصر ڈر کے مارے تھوڑے فاصلے پر رک گئے ، ملزم اسلحہ لہراتے ہوئے جانب کڑی فرار ہو گئے، وقاص اور صدام ضربات کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی جان کی بازی ہار گئے۔ تھانہ چوٹالہ کے اسسٹنٹ سب انسپکٹر نعیم شہزاد نے خالد بیگ کی درخواست پر نامزد ملزمان کے خلاف زیر دفعہ 302 ت پ، 148 ت پ، 149 ت پ ، 109 ت پ کے تحت مقدمہ درج کرکے ملزمان کی تلاش شروع کردی ہے۔


0 comments

Comments

Rated 0 out of 5 stars.
No ratings yet

Add a rating
bottom of page