top of page

جہلم میں ڈکیتی کی واردات کے دوران شہری کو قتل کرنے والے مجرمان کو عمر قید اور جرمانے کی سزا

جہلم:جہلم کے علاقہ ڈھوک جمعہ میں ڈکیتی کی واردات کے دوران شفیق نامی شخص کو قتل کرنے والے مجرمان کو عمر قید اور جرمانے کی سزا، ایڈیشنل سیشن جج شہباز حسین نے فیصلہ سنا دیا، تیرہ سال الگ سزا کا بھی حکم سنا دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق جہلم پولیس کی موثر تفتیش کے بعد ایڈیشنل سیشن جج شہباز حسین نے قتل کے مقدمہ نمبر 379/22 بجرم 412/396/302 ت پ تھانہ سول لائینز کا فیصلہ سنا دیا۔ مجرمان محمد عثمان، آصف جاوید اور عامر شیروز نے سال 2022 میں مقتول محمد شفیق کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا تھا، جہلم پولیس نے مجرمان کو ٹریس کر کے گرفتار کیا اور ٹھوس شواہد کے ساتھ چالان عدالت کیا اور مقدمہ کی موثر پیروی کی جس کے پیش نظر معزز عدالت نے مجرم کو قرار واقعی سزا سنائی۔مجرم محمد آصف جاوید کو قتل کے جرم میں عمر قید اور 1 لاکھ روپے جرمانہ، جبکہ روبری کے جرم میں 10 سال قید معہ 50000 روپے جبکہ مال مسروقہ کی برآمدگی پر 3 سال قید معہ 50000 روپے جرمانہ کی سزا کا حکم سنایا گیا۔مجرم محمد عثمان کو قتل کے جرم میں عمر قید اور 1 لاکھ روپے جرمانہ جبکہ روبری کے جرم 10 سال قید معہ 50000 روپے جرمانہ، جبکہ مال مسروقہ کی برآمدگی پر 3 سال قید معہ 50000 روپے جرمانہ کی سزا کا حکم سنایا گیا۔

0 comments
bottom of page