top of page

جہلم! مہنگ بل ناقابل برداشت ۔شہری گیس کے بل دیکھ کر بے بسی کی تصویر بن گئے ۔ حکومت وقت پر پھٹ پڑے

جہلم (ڈسٹرکٹ رپورٹر Jhelumnews.uk) مہنگائی کی چکی میں پسی عوام پر گیس بم  جہلم کے  شہری گیس کے بل دیکھ کر بے بسی کی تصویر بن گئے سوئی گیس کے بلوں میں اضافہ لگے بل شہریوں کو وصول تین سے چار سو روپے  آنے والے بل 13 سے 14 سو روپے میں آچکے جہلم کے شہری حکومت پر پھٹ پڑے کیا حکومت مفت آٹے کی رقم بجلی اور گیس کے بلوں میں وصول کرنا چاہتی ہے شہریوں کا سوال  تفصیلات کے مطابق سوئی گیس کے بل دیکھ کر جہلم کے شہری ششدر رہ گئے تین سے چار سو روپے آنے والے بل 13 سے 14 سو روپے آچکے جبکہ سات سے ایک ہزار روپے آنے والے بل دو ہزار سے تین ہزار تک جا پہنچے شہریوں نے شدید غم و غصے کا اظہار کیا اور کہا کہ حکومت آخر اور کتنی مہنگائی کرنا چاہتی ہے کیا اس نے غریب عوام کو مارنے کا پروگرام بنا لیا ہے اب تو ہم بچوں کے لیے دو وقت کی روٹی بھی پوری نہیں کرسکتے حکومت 30000 روپے کمانے والے فرد کا بجٹ بنا کر دکھا دے  جو کرائے کے مکان میں بھی رہتا ہو اور اس کے تین سے چار بچے بھی ہوں وہ فرد کس طرح گزارہ کر رہا ہے شائید اس کا حکومت کو کوئی ادراک نہیں اب بجلی کے بلوں کے بعد گیس کے بلوں میں بھی اضافہ ہوچکا ہم کیسے اپنے بچوں کے اخراجات پورے کریں تعلیم دلوائیں یا ان کی دو وقت کی روٹی کو پورا کریں بل کیسے جمع کروائیں شہریوں نے مزید کہا کہ کھانے پینے کی اشیاء سمیت کئی اشیاء ضرورت کی چیزوں میں ہوشربا اضافہ ہوچکا حکومت آئی ایم ایف کی شرائط کے آگے گھٹنے ٹیک چکی جبکہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بھی ہوشربا اضافہ ہوچکا حکومت نے اعلان تو کیا تھا کہ موٹرسائیکل سواروں کو سستے پیٹرول کی فراہمی کی جائے گی لیکن وہ بھی غریب عوام کے ساتھ ایک جھوٹا وعدہ نکلا اور آئی ایم ایف نے سستے پیٹرول کی فراہمی کو بھی رکوا دیا شہریوں نے کہا کہ بہتر ہے کہ یہ ملک ہی آئی ایم ایف کے حوالے کر دیا جائے تاکہ وہ اپنی مرضی کے مطابق ہی ہر چیز کے ریٹس بڑھا سکیں  شہریوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ غریب عوام کے لیے کچھ سوچے اور مہنگائی میں کمی کرے 

0 comments

Comentarios

Obtuvo 0 de 5 estrellas.
Aún no hay calificaciones

Agrega una calificación
bottom of page