top of page

جہلم! موسم گرما کی آمد ۔غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ شروع۔ بوسیدہ ٹرانسفارمرز جواب دینے لگے۔ شہری پریشان

جہلم (ڈسٹرکٹ رپورٹر Jhelumnews.uk) حکومت نے بجلی کے ریٹس تو کئی گنا بڑھا دئیے لیکن محکمہ واپڈا کے نوسیدہ نظام کو درست نہ کر سکے جہلم میں موسم گرما کی آمد کے ساتھ ہی محکمہ واپڈا کی طرف سے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کی آمد کا سلسلہ شروع جبکہ بوسیدہ ٹرانسفارمرز بھی خراب ہونے لگے گزشتہ رات ٹرانسفارمر خراب ہونے سے شہر کے مختلف علاقوں میں دو گھنٹے بجلی کی فراہمی معطل رہی  تفصیلات کے مطابق حکومت نے بجلی کے یونٹس میں کئی گنا اضافہ کر دیا لیکن افسوس کہ محکمہ واپڈا کے بوسیدہ نظام کو درست نہ کر سکے اکثر علاقوں میں گھٹیا میٹریل سے تیار ہونے والے ٹرانسفارمر ہلکا سا لوڈ بھی برداشت نہیں کرتے اور پنکھے چلنے کے ساتھ ہی ٹرانسفارمر بھی دم توڑ جاتے ہیں موسم گرما کی آمد کے ساتھ ہی محکمہ واپڈا کی طرف سے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کی  آمد بھی شروع ہوگئی جبکہ بوسیدہ ٹرانسفارمرز ابھی سے خراب ہونا شروع ہوچکے ہیں گزشتہ سال بھی موسم گرما کی شدت سے کئی ٹرانسفارمر خراب ہوئے اور دن رات کئی کئی گھنٹے بجلی کی فراہمی معطل رہی تھی اس بار ابھی موسم گرما شروع ہی ہوا ہے کہ بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ شروع کر دی گئی جبکہ بوسیدہ ٹرانسفارمر بھی دم توڑنے لگے  شہریوں نے کہا کہ محکمہ واپڈا کے بوسیدہ نظام کو کب درست کیا جائے گا حکومت کو صرف بجلی یونٹس بڑھانے کا ہی شوق ہے جبکہ ان کی کارکردگی زیرو ہے اگر حکومت اتنی بجلی مہنگی فراہم کرتی ہے تو بجلی کی فراہمی کو بھی دن رات یقینی بنائے اب موسم گرما کے شروع ہوتے ہی  بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ شروع کر دی گئی جبکہ بوسیدہ اور بوڑھے ٹرانسفارمر بھی لوڈ بڑھنے سے دم توڑنے لگے ہیں شہریوں نے مزید کہا کہ حکومت نے بجلی کے یونٹس کئی گنا بڑھا دییے ہیں لیکن  بجلی کی فراہمی کو درست نہیں کیا جارہا حکومت محکمہ واپڈا کو احکامات جاری کرے کہ موسم گرما میں اچھے اور زیادہ لوڈ اٹھانے والے ٹرانسفارمر لگائے یہاں تو ایک علاقہ میں ایک ایک ٹرانسفارمر لگا ہوا ہے جو کہ پورے علاقے کا بجلی کا لوڈ برداشت نہیں کر سکتا شہریوں نے ارباب اختیار سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے 


0 comments
bottom of page