top of page

جہلم: لنڈے کے گرم کپڑوں کی مانگ میں بے پناہ اضافہ، دکانداروں نے لنڈے کی اشیاء کی قیمتیں بڑھادیں

جہلم: لنڈے کے گرم کپڑوں کی مانگ میں بے پناہ اضافہ، دکانداروں نے لنڈے کی اشیاء کی قیمتیں بڑھادیں، لنڈے کی اشیاء خرید نا شہریوں کیلئے مشکل ترین ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق سردی کی شدت میں اضافہ ہوتے ہی لنڈے کے گرم کپڑوں کی مانگ میں بے پنا اضافہ ہو گیا ہے جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے دکانداروں نے لنڈے کی اشیاء کی قیمتیں بڑھا دی ہیں۔ لنڈے کی اشیاء خریدنا غریب سفید پوش طبقہ کے افراد کیلئے آسان نہیں رہا۔اقبال لائبریری روڈ، اولڈ جی ٹی روڈ، مجاہد آباد پل، ماڈرن بازار سمیت دیگر بازاروں میں لنڈا بازارقائم ہیں جہاں گرم کپڑوں کی فروخت جاری ہے، دکانداروں نے خریداروں کارش دیکھتے ہوئے پرانے کپڑوں ، جوتوں ، کوٹ ،جرسیوں، جرابوں ،کمبل، جیکٹس وغیرہ کی قیمتیں بھی پچاس فیصد تک بڑھادی ہیں۔ لنڈا بازار میں سویٹر 600 ، پینٹ اور شرٹ 700 ،کوٹ 1000 جیکٹ 1500 روپے میں فروخت کی جارہی ہیں، یہ قیمت گزشتہ سال کی نسبت 50 فیصد زیادہ ہے۔ لنڈا بازاروں میں گاہک مہنگائی کا رونا روتے نظر آتے ہیں۔ کیونکہ قیمت ان کی قوت خرید سے باہر ہے۔ دوسری جانب دکاندار وںکا کہنا ہے کہ کاروباری مندی کی وجہ اور ڈالر کی اونچی اُڑان کے باعث لنڈے کے اشیاء کی قیمتیں بڑھ چکی ہیں ۔کپڑے مہنگے داموں خرید کر سستے فروخت نہیں کر سکتے ۔دکانداروں کا مزید کہنا ہے کہ ملکی معیشت ڈوب رہی ہے اور ٹیکسز کی مد میں رقم وصول کر لی جاتی ہے اور ہمیں پرافٹ کی بجائے نقصان ہوتا ہے جس کے باعث لنڈے کے ملبوسات کے دام بڑھا دیئے گئے ہیں

0 comments
bottom of page