top of page

اسسٹنٹ کمشنر دینہ سعدیہ ڈوگر کا تحصیل دینہ کے دو سینیئر صحافیوں کو تفصیلی انٹرویو ۔دینہ کے مسائل اور ان کے حل پر گفتگو


دینہ(پروفیسر خورشید ڈار)اسسٹنٹ کمشنر دینہ سعدیہ ڈوگر نے تحصیل دینہ کے دو سینیئر صحافیوں کو تفصیلی انٹرویو دیتے ہوئے بتایا کہ انتہائی قلیل عرصے میں میں نے مختلف یونین کونسلز کے وزٹ کر کے عوام کے بنیادی مسائل کو حل کرنے کی کوشش کی ہے۔اس وزٹ کے دوران متعلقہ حلقے کا نمبردار ، پٹواری ، سیکرٹری یونین کونسل اور سابق کونسلرز کو باور کروایا گیا ہے کہ حکومت پنجاب کے احکامات کی روشنی میں کامیابی اس وقت تک ناممکن ہے جب تک عملی اجتماعی کوشش نہ کی جائے۔میرے لیے یہ بات خوش ائند ہے کہ اس وزٹ کے دوران لوگ اپنے انفرادی مسائل سے بھی اگاہ کرتے رہے ہیں۔جن کو میں نے حتی المقدور حل کرنے کی کوشش کی ہے۔ریوینیو کے سلسلے میں ان کا کہنا تھا کہ مروجہ قوانین کے تحت ہر فرد اور ادارے سے حاصل کیا جا رہا ہے ۔اس حوالے سے کسی گورنمنٹ ملازم کی کوتاہی کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ان پانچ ہفتوں کے دوران میں نے متعدد پٹرول پمپس کو پیمانے میں کمی کی وجہ سے بھاری جرمانے کیے اور غیر قانونی گیس ایجنسیوں کو بھی سیل کیا گیا ہے۔اسی طرح عوام کے مفاد میں محکمہ فوڈ کے ساتھ مل کر بھی کاروائیاں جاری ہیں۔جس کے اچھے نتائج برامد ہوں گے۔رورل ہیلتھ سینٹر دینہ میں سہولیات کے فقدان سے متعلق اظہار تشویش کرتے ہوئے اس بات کی طرف اشارہ کیا کہ اس کی بہتری کے لیے اپنی کوششیں جاری رکھوں گی۔سر دست رورل ہیلتھ سینٹر کے قریب سے گزرنے والے نالے کی صفائی نکاسی اور مرمتی کام کروایا جائے گا۔ان کا گرین بیلٹ سے متعلق یہ کہنا تھا کہ ڈپٹی کمشنر جہلم کے احکامات کی روشنی میں اس کو مزید بہتر بنایا جائے گا۔سبزی اور فروٹ کے سرکاری ریٹس پر عمل درامد کروانے کے لیے بھی عملی اقدامات جاری ہیں۔انٹرویو کے اختتام پر پروفیسر خورشید علی ڈار اور ظہیر عبّاس نے تفصیلی معلومات فراہم کرنے پر اسسٹنٹ کمشنر دینہ کا شکریہ ادا کیا۔

0 comments
bottom of page